19

سکھر ناظرین اب اپکویے چلتے ھیں سندھ کے تیسرے بڑے شہر سکھر کے جڑواں روہڑی جہاں آپ ڈیٹ کر رھے ھیں بیورو چیف سید نصیر حسین زیدی کمیرا ٹیم کے ہمراہ۔ زیدی کیا خبریں ھیں پاکستان ریلوے کمائ کے لحاظ بہت بڑا اداراہ ھےروہڑی پاکستان کا واحد اشٹیشن جنکشن ھے جو چاروں صوبوں کو ریل کے ذریعہ ملانے میں اھم کردار ادا کر رھا ھے دن رات سنکڑروں کی

سکھر ناظرین اب اپکویے چلتے ھیں سندھ کے تیسرے بڑے شہر سکھر کے جڑواں روہڑی جہاں آپ ڈیٹ کر رھے ھیں بیورو چیف سید نصیر حسین زیدی کمیرا ٹیم کے ہمراہ۔ زیدی کیا خبریں ھیں
پاکستان ریلوے کمائ کے لحاظ بہت بڑا اداراہ ھےروہڑی پاکستان کا واحد اشٹیشن جنکشن ھے جو چاروں صوبوں کو ریل کے ذریعہ ملانے میں اھم کردار ادا کر رھا ھے دن رات سنکڑروں کی تعداد میں عوام سفر کرتی ھے پر اس اشٹیشن کی بد نصیبی یہ ھے کہ بابا آدم کے زمانے میں سی سی ٹی سولہ کمرے لگا گیے تھے جو ہر آنے جانے کی فوٹیج ریکاڈ کرتا تھا پر وہ ناکارہ خراب ھوگے۔ اسکے چا ر یٹ فارم ھیں پلیٹ فارم پر دو سے تین پولیس نوجوان نظر آتے ھیں یہاں پر دو یاڈ ھیں ایک ار۔جی ۔وای دوسرا اشٹیشن ریلوے یاڈ ھے جو تقریبا میل سے بھی زیادہ لمبا ھے ایک شفٹ میں بارہ سے سولہ ملازم ڈیوٹی سر انجام دے رھے ھیں جو ناکافی ھیں اشٹین یادڈ اور ار۔جی۔وای یاد میں دو دو پولیس جوان ڈیوٹی دے رھے ھیں جبکہ روزانہ دس سے پندرہ مال گاڑیاں آتی جاتی ھیں اس ھی طرح مسافر ٹرینوں کی بر
مار ھوتی ھے ہر آنے جانے مسافروں وعوام کیلیے اسکین مشین لگایا گی تھی جس کی مرمت پر لاکھوں روپیہ خرچ ھو ے کے باوجود خراب پڑی ھے سا بقہ ریلوے منسڑ شیخ رشید صاحب اس مشین پر توجہ نہیں دی اور اب ریلوے وزیر سعد رفیق سے روہڑی آمد پر توجہ دلائی مگر وعدہ وفا نہ کر سکے خبرروں تک متعدد رھے۔ سیاسی سماجی شوشل تنظیموں کے رہنماؤں شہریوں کی بالا پولیس احکام سے مطالبہ ھے پولیں۔ کی نفری بڑھاھیں تاکہ کرایم پر قابو پایا جاےاور اسکین مشین کو ٹھیک کیا جاے
تاکہ ہر آنے جانے والے فرد کی تلاشی مشین کے ذریعہ ھو

یہ خبر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں