29

شورکوٹ(ڈاکٹر محمد ادریس) ایک بیمار زہن معاشرے کے لیے سرطان ہوتا ہے اور حسد کرنا بھی بیمار زہن کی ایک علامت ہے ڈاکٹر کاشف رشیدگرواہ

شورکوٹ(ڈاکٹر محمد ادریس) ایک بیمار زہن معاشرے کے لیے سرطان ہوتا ہے اور حسد کرنا بھی بیمار زہن کی ایک علامت ہے ڈاکٹر کاشف رشیدگرواہ
تحصیل پریس کلب شورکوٹ میں شمولیت اختیار کرنے والے صحافی TV Today کے نمائندے ڈاکٹر کاشف رشید گرواہ نے دماغی صحت کے عالمی دن کو پیغام دیتے ہوئے کہا ہے کہ دماغی صحت کا عالمی دن منانے کا آغاز سن نوے کی دہائی میں کیا گیا جس کا مقصد عالمی سطح پر ذہنی صحت کی اہمیت اور دماغی رویوں سے متعلق آگاہی بیدار کرنا ہے۔ذہنی صحت کا دارومدار معاشرتی ، جذباتی اورنفسیاتی تندرستی پر مشتمل ہے۔ ذہنی صحت آپ کی جسمانی صحت کو بہتر بناتی ہےجس سے ایک صحت مند خاندان ، معاشرہ، اور ترقی یافتہ قوم پروان چڑھتی ہے۔ ہمارے طرزِ زندگی میں روزمرہ کے حالات ، تناؤ اور مشکل حالات کا مقابلہ کرنا ، مثبت معاشرتی تعلقات استوار کرنا، رویوں میں لچک پیدا کرکے رشتوں میں الجھاؤ سے زیادہ سلجھاؤ کے لئیے قدم بڑھانا ، کسی دوسرے کو خوشی دے کر خوشی اور سکون محسوس کرنا ، دوسروں کی کامیابی و ترقی میں مددگار ثابت ہونا ، حسد اور حرص سے بچنا غرضکہ ایسی بہت سی عادات و اطوار ہیں جن سے صحت مند زہن کی نشونما ہوتی ہے۔
عالمی ادارہ برائے صحتWHO کے مطابق صحت جسمانی، ذہنی، سماجی اور روحانی بہبود کی حالت کا نام ہے ناکہ محض بیماری اور کمزوری کی غیر موجودگی کا نام ہے

یہ خبر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں