70

اداکار دلیپ کمار شدید علیل تھا اور اسے یقین ہو چکا تھا کہ اب میں زیادہ دن تک زندہ نہیں رہ سکوں گا ، میں جب اس سے ملنے گیا تو اس کی آنکھوں میں کچھ چمک سی آ گئی اور مجھے دیکھ کر اس کا چہرہ ہشاش بشاش سا نظر آنے لگا ، مجھے انہوں نے کرسی پر بیٹھنے کیلئے کہا ، میں جیسے ہی کرسی بیٹھا اس نے کمرے میں موجود چار افراد کو باہر جانے کیلئے کہا ، مگر نرس نے جانے سے انکار کردیا کہ میں آپ کو اس حالت میں چھوڑ کر نہیں جا سکتی یہ میرے پیشے کے خلاف

اداکار دلیپ کمار شدید علیل تھا اور اسے یقین ہو چکا تھا کہ اب میں زیادہ دن تک زندہ نہیں رہ سکوں گا ، میں جب اس سے ملنے گیا تو اس کی آنکھوں میں کچھ چمک سی آ گئی اور مجھے دیکھ کر اس کا چہرہ ہشاش بشاش سا نظر آنے لگا ، مجھے انہوں نے کرسی پر بیٹھنے کیلئے کہا ، میں جیسے ہی کرسی بیٹھا اس نے کمرے میں موجود چار افراد کو باہر جانے کیلئے کہا ، مگر نرس نے جانے سے انکار کردیا کہ میں آپ کو اس حالت میں چھوڑ کر نہیں جا سکتی یہ میرے پیشے کے خلاف ہے اور آپ ایک مہان شخصیت ہیں اگر آپ کو کچھ ہو گیا تو مجھے ہسپتال والے کبھی بھی معاف نہیں کریں گے اور میرا مستقبل داؤ پر لگ جائے گا ، دلیپ کمار نے خفیف سی مسکراہٹ کے ساتھ اسے رکنے کی اجازت دیتے ہوئے باقی لوگوں کو کمرے سے جانے کیلئے کہا ، جب سب چلے گئے تو اس نے نرس سے کہ دروازہ بند کر دیں ، یہ اچھا ہے کہ آپ بطور گواہ یہاں موجود ہیں ، نرس نے دروازے کو کنڈی لگائی اور پلنگ کے پاس آ کر کھڑی ہوگئی ، دلیپ کمار صاحب نے ایک ٹھنڈی آہ بھری اور مجھ سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا ، یار آج میں تم کو بتاتا ہوں کہ میں کوئی اتنا بڑا اداکار نہیں ہوں بس مجھے لوگوں نے سر چڑھایا ہوا ہے حقیقت یہ ہے کہ پاکستان میں مجھ سے بھی بڑے بڑے اداکار موجود ہیں مگر انہیں کوئی بھی پذیرائی نہیں ملتی ، میں نے یہ بات پاکستان کی میڈیا سے بھی کہی مگر انہوں نے بھی یہ بات لوگوں تک نہیں پہنچائی ، مگر مجھے یقین ہے میرے بعد تم یہ بات لوگوں تک ضرور پہنچاؤ گے اور نرس کی طرف دیکھتے ہوئے کہنے لگے آپ اس بات کی گواہ ہیں کہ یہ بات میں نے خود بزبان اپنی تمہاری موجودگی میں اپنے دوست کو بتائی ہے تم چاہو تو اس کی ویڈیو بھی بنا سکتی ہو میرا بیان ریکارڈ کرنے کیلئے کہ میں اتنا بڑا اداکار نہیں جتنے بڑے فنکار پاکستان میں ہیں جنہیں جب عدالت میں طلب کیا جاتا ہے تو بیماری کی ایسی اداکاری کرتے ہیں کہ میں خود کو بہت چھوٹا محسوس کرتا ہوں ، ایک اداکار تو ایسا ہے کہ دوائی لینے گیا تھا آج تک واپس نہیں آیا ۔

جسے افسانچہ سمجھ نہ آئے وہ ستو پیئے

#نثاریات

یہ خبر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں