ابوھریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ میری ملاقات رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلّم سے ہوئی۔ اس وقت میں جنبی(غسل فرض تھا) تھا۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے میرا ہاتھ پکڑ لیا اور میں آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ چلنے لگا۔ آخر آپ صلی اللہ علیہ وسلم ایک جگہ بیٹھ گئے اور میں آہستہ سے اپنے گھر آیا اور غسل کر کے آپکی خدمت میں حاضر ہوا۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم ابھی بیٹھے ہوئے تھے، آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے دریافت فرمایا اے ابوہریرہ! کہاں چلے گئے تھے،

📝 اؑٙوس بن اؑوس الثقفی رضی اللّہ عنہ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو فرماتے سنا: جو شخص جمعہ کے اچھی طرح غسل کرے پھر جلدی اول وقت میں ( مسجد) جائے، پیدل جائے، سوار نہ ہو اور امام سے قریب ہو کر غور سے خطبہ سنے، اور لغو بات نہ کہے تو اس کو ہر قدم پر ایک سال کے روزوں اور قیام کا ثواب ملے گا ۔

Surat No 27 : سورة النمل – Ayat No 86.87.88 کیا ان کو سجھائی نہ دیتا تھا کہ ہم نے رات ان کے لیے سکون حاصل کرنے کو بنائی تھی اور دن کو روشن کیا تھا ؟ 104 اسی میں بہت نشانیاں تھیں ان لوگوں کے لیے جو ایمان لاتے تھے ۔ 105 اور کیا گزرے گی اس روز جب کہ صور پھونکا جائے گا اور ہول کھا جائیں گے

Surat No 27 : سورة النمل – Ayat No 67۔۔۔۔ to۔۔۔۔ 70 یہ منکرین کہتے ہیں ” کیا جب ہم اور ہمارے باپ دادا مٹی ہو چکے ہوں گے تو ہمیں واقعی قبروں سے نکالا جائے گا ؟ یہ خبریں ہم کو بھی بہت دی گئی ہیں اور پہلے ہمارے آبا و اجداد کو بھی دی جاتی رہی ہیں ، مگر یہ بس افسانے ہی افسانے ہیں جو اگلے وقتوں سے سنتے چلے آرہے ہیں ۔ ”

Surat No 27 : سورة النمل – Ayat No 63… to… 66 اور وہ کون ہے جو خشکی اور سمندر کی تاریکیوں میں تم کو راستہ دکھاتا ہے 78 اور کون اپنی رحمت کے آگے ہواؤں کو خوشخبری لے کر بھیجتا ہے؟ 79 کیا اللہ کے ساتھ کوئی دوسرا خدا بھی ﴿یہ کام کرتا﴾ ہے؟ بہت بالا و برتر ہے اللہ اس شرک سے جو یہ لوگ کرتے ہیں ۔ اور وہ کون

*یہ مولوی ہی ہیں جن کی وجہ سے ہم ترقی نہیں کر رہے۔۔!* *نہیں سمجھے۔۔۔؟* چلئے اک تمثیلی واقعہ سنا دیتا ہوں ﻣﯿﺮﺍ ﺑﮭﺘﯿﺠﺎ ﺟﯿﺴﮯ ﮨﯽ ﮔﮭﺮ ﻣﯿﮟ ﺩﺍﺧﻞ ﮨﻮﺍ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ’’ﻣﻮﻟﻮﯼ” ﮐﮯ ﻃﻨﺰ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮪ ﮐﮩﺎ: ﺁﺅ ﺑﮭﺌﯽ ﻣﻮﻟﻮﯼ ﺻﺎﺣﺐ! ﮐﮩﺎﮞﺳﮯ ﺗﺸﺮﯾﻒ ﻻ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ؟ ﻣﯿﺮﮮ ﺑﮭﺘﯿﺠﮯ ﻧﮯ ﻣﺠﮭﮯ ﺩﺍﺧﻞ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯽ ﺳﻼﻡ ﮐﯿﺎ،

Surat No 27 : سورة النمل – Ayat No 15…. to…. 19 ﴿دوسری طرف﴾ ہم نے داؤد ( علیہ السلام ) و سلیمان ( علیہ السلام ) کو علم عطا کیا 18 اور انہوں نے کہا کہ شکر ہے اس خدا کا جس نے ہم کو اپنے بہت سے مومن بندوں پر فضیلت عطا کی ۔ 19 اور داؤد ( علیہ السلام ) کا وارث سلیمان 20 ( علیہ السلام ) ہوا ۔ اور اس نے کہا ” لوگو ،

Surat No 26 : سورة الشعراء – Ayat No 221… to…. 227 لوگو ، کیا میں تمہیں بتاؤں کہ شیاطین کس پر اترا کرتے ہیں؟ وہ ہر جعل ساز بدکار پر اترا کرتے ہیں ۔ 140 سنی سنائی باتیں کانوں میں پھونکتے ہیں اور ان میں سے اکثر جھوٹے ہوتے ہیں ۔ 141 رہے شعراء ، تو ان کے پیچھے بہکے ہوئے لوگ چلا کرتے ہیں

📝 عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہما کہتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم دو قبروں پر گزرے تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ ان دونوں قبر والوں کو عذاب دیا جا رہا ہے اور کسی بڑے گناہ پر نہیں۔ ایک تو ان میں سے پیشاب سے نہیں بچتا تھا اور دوسرا چغل خوری کیا کرتا تھا۔